Skip to main content

Posts

عمران خان ریپٹلین سائیکوپیتھ

نفسیاتی مریض یا پاگل لفظ 'سائیکوپیتھ' کا درست ترجمہ نہیں۔ بلکہ 'سائیکوپیتھ' عام لوگوں کی نسبت ذہنی طور پر زیادہ چاک و چوبند ہوسکتے ہیں۔ ان کو 'ہیومن پریڈیٹرز' بھی کہا جاتا ہے۔ 'ہیومن پریڈیٹرز' یعنی یہ انسانوں کی جان، مال حتی کہ ان کے احساسات اور جذبات کا بھی شکار کرتے ہیں۔  وہ یہ سب یہ کیسے کر لیتے ہیں اور میں نے عنوان میں عمران خان کا نام کیوں لکھا ہے؟ اس کا جواب یہ ہے کہ 'سائیکوپیتھ' میں دوسرے انسانوں سے الگ کچھ صفات ہوتی ہیں جو ان کو قدرتی شکاری بناتی ہیں۔ انکی یہ صفات دنیا بھر کے ماہرین نے برسوں کی تحقیق اور محنت کے بعد جمع کی ہیں اور حیرت انگیز طور پر وہ تقریباً ساری عمران خان میں پائی جاتی ہیں۔  سائیکوپیتھس کو 'ریپٹلینز' بھی کہا جاتا ہے۔ کیونکہ انکی کچھ عادتیں ریپٹلینزجیسی ہوتی ہیں۔ ریپٹلینز کے بارے میں قرآن اور سائنس نے کچھ آگہی دی ہے اس پر بھی بات کرینگے۔  اگر آپ ایک بار ٹھنڈے دل سے یہ مضمون پڑھ لیں تو شائد آپ عمران خان کی مقبولیت، شخصیت، سوچ اور فیصلوں کو سمجھ لیں۔ بہت سی چیزوں کے بارے میں آپ کی حیرت دور ہوسکتی ہے۔  ریپٹلین سائیک
Recent posts

مخصوص نشتوں کے حوالے سے متنازع فیصلہ

پی ٹی آئی کے وکیل علی ظفر نے کچھ دن پہلے خود کہا کہ 'قانون کے مطابق ہم یہ نہیں جیت سکتے سوائے اس کے کہ جج کچھ پیار محبت کریں۔' عدالت میں دلائل دیتے بھی وکلاء کا زور اس پر تھا کہ آپ عوام کی منشاء کے مطابق فیصلہ کریں نہ کہ آئین کے مطابق۔ کیونکہ آئینی اور قانونی فیصلہ پھر وہی ہوگا جو چیف الیکشن کمشنر نے یا پھر پشاور ھائی کورٹ کے ججوں نے پانچ صفر سے دیا تھا۔ لہذا پی ٹی آئی کی فرمائش پر ایک ایسا فیصلہ دیا گیا جس کی شائد پاکستان کی تاریخ میں کوئی مثال نہ ملے۔ درخواست گزار تھی سنی اتحاد کونسل اور دوسری فریق تھی حکومت۔ لیکن یوتھیے ججوں نے سیٹیں دے دیں پی ٹی آئی کو۔ یہ ایسا سرپرائز تھا جس پر شائد خود پی ٹی آئی بھی حیران ہوگی۔ اب اس فیصلے میں کیا کیا چمتکار کیے گئے ذرا ایک نظر دیکھیں اور سر دھنیں!! "امیدوار آزاد لڑے اور آزاد حیثیت سے ہی اپنے کاغذات جمع کروائے لیکن سپریم کورٹ نے ان کو پی ٹی آئی کے تسلیم کر لیا۔" (آئین میں نیا اضافہ، نیا قانون اور سیاسی جماعت کی سہولت کاری) "آزاد امیدوار اپنی مرضی سے سنی اتحاد کونسل میں گئے۔ انکو پی ٹی ائی جوائن کرنے کا حکم دیا گیا" (آئ

آصف زرداری، نواز شریف اور عمران خان میں سے کون زیادہ کرپٹ تھا؟

آصف زرداری، نواز شریف اور عمران خان میں سے کون زیادہ کرپٹ تھا؟ ہم ان کیسز پر بھی بات کرینگے جن میں ملزم بری ہوچکے ہیں یہ گمان کر کے کہ پاکستان کے کرپٹ جج خرید لیے گئے ہونگے۔ نیز ہم ساری کرپشن کو ملین ڈالرز میں بیان کرینگے۔ (ایک ملین ڈالر آج کے تقریباً 28 کروڑ روپے بنتے ہیں) نواز شریف  مے مئیر کے علاقے میں ایون فیلڈ اپارٹمنٹس (1 ملین ڈالر) یہ اپارٹمنٹس جس وقت خریدے گئے اس وقت انکی مالیت 1 ملین ڈالر سے بھی کم تھی۔ اب شائد ایک اپارٹمنٹ 10 ملین ڈالر کا ہو۔ لیکن کیس یہ تھا کہ اس وقت جب خریدے گئے 1 ملین ڈالر کی رقم کہاں سے آئی تھی؟ (اس کیس میں نواز شریف بری ہوچکے ہیں) العزیزیہ سٹیل مل اور ہل میٹل ریفرنس (11 ملین ڈالر) یہ حسین نواز نے 2001 اور 2005 میں بنائی تھیں۔ العزیزیہ سٹیل مل 6 ملین ڈالر اور ہل میٹل 5 ملین ڈالر کی تھی۔ اس پر بھی مے فئیر فلیٹس والا کیس ہی بنا تھا کہ یہ 11 ملین ڈالر کہاں سے آئے؟ (اس کیس میں نواز شریف بری ہوچکے ہیں) ہیلی کاپٹر کیس اور توشہ خان گاڑی کیس (1 ملین ڈالر) نواز شریف پر کیس بنا تھا کہ وہ ہیلی کاپٹر کے مالک ہیں جو اس نے گوشواروں میں ظاہر نہیں کیا۔ نواز شریف نے کاغذا

عمران خان مغرب کا آلہ کار

 1995ء میں عمران خان نے بدنام زمانہ یہودی خاندان گولڈ سمتھ سے رشتہ استوار کیا اور 1996ء میں پی ٹی آئی (پاکستان تحریک انصاف) کی بنیاد رکھی۔ گولڈ سمتھ خاندان بانیان اسرائیل میں سے ہے۔  اس دور میں حکیم محمد سعید اور ڈاکٹر اسرار احمد مرحوم نے عمران خان کو مغرب کا آلہ کار قرار دیا۔ بلکہ حکیم محمد سعید نے تو باقاعدہ تفصیل بھی بتائی کہ اس کو کس طرح اور کب پوری طرح پاکستان پر مسلط کیا جائیگا۔ اس کی وہ پیشن گوئیاں حیرتناک انداز میں پوری ہوئیں۔ تاہم ان انکشافات کے بعد حکیم محمد سعید کو قتل کر دیا گیا۔ (آج تک قاتل کا سراغ نہیں ملا) جمائما کے ساتھ عمران خان کی لڑائیاں عروج پر پہنچیں حتی کہ جمائما کا بازو بھی ٹوٹا۔ بقول عمران خان کے میں اپنا دفاع کر رہا تھا کیونکہ جمائما کو چیزیں اٹھا کر مارنے کی عادت تھی۔ عمران خان نے مہر بخاری کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ طلاق کے بعد بھی میرا لندن میں قیام و طعام ہمیشہ گولڈ سمتھ فیملی کے ساتھ ہی ہوتا ہے۔  صاحبزادہ یعقوب خان کی ہنری کسنجر سے امریکہ میں ملاقات ہوئی تو ہنری کسنجر نے کہا کہ 'ہمارے لڑکے کا خیال رکھنا۔' صاحبزادہ یعقوب خان نے پوچھا کہ آپکا لڑکا ک

پی ٹی آئی کی امریکہ مخالفت کی مخالفت

پاکستان کے ایوان میں جو قرار داد پیش کی گئی تھی وہ صرف تین نکات پر مشتمل تھی۔  امریکہ پاکستان میں مداخلت نہ کرے۔  امریکہ اسرائیل کی غزہ میں بربریت کو روکے۔  امریکہ مقبوضہ کشمیریوں پر ہونے والے مظالم پر آواز اٹھائے۔  ان میں سے کس نکتے پر پی ٹی آئی کو اعتراض تھا؟ کوئی یوتھیا جواب دے دے؟ قرار داد میں امریکہ، انڈیا اور اسرائیل تینوں کو ٹارگٹ کیا گیا تھا۔  لیکن پی ٹی آئی شد و مد سے یہ قرار داد مسترد کردی۔ کوئی ایک جواز پیش نہیں کیا کہ کیوں؟ حتی کہ سوشل میڈیا پر بھی اس کا کوئی معقول جواز پیش نہیں کر رہے۔ جس کے بعد عوام کو اسکا جو جواز سمجھ آرہا ہے وہ ایک ہی ہے۔ کہ عمران خان نے اپنی تمام امیدیں امریکہ سے باندھی ہوئی ہیں۔ ایسی کسی امریکہ مخالف قرار داد کی حمایت کر کے وہ امریکی کو ناراض نہیں کر سکتا۔ لہذا ہر وہ قرار داد جس پر امریکہ، انڈیا یا اسرائیل ناراض ہوسکتے ہیں اس کو پی ٹی آئی نے 'ایبسلوٹلی ناٹ' کہنا ہے۔   کوئی یوتھیا یہ جواب دینے پر تیار نہیں کہ  اسرائیل جس نے فلسطینوں حتی کہ ان کے معصوم بچوں تک کو کاٹ ڈالا اور ان پر ذرا رحم نہیں کھا رہا۔ اس اسرائیل و پی ٹی آئی سے ہمدردی کا مروڑ

عمران خان کے ایبسلوٹلی ناٹ کے 10 ثبوت

 1۔ عمران خان نے اپنی حکومت میں سی پیک کو تقریباً فریز کر دیا تھا۔ جو اس وقت پوری دنیا میں سب سے بڑا امریکہ مخالف منصوبہ ہے۔  2۔ امریکہ کی فرمائش پر عمران خان نے سی پیک معاہدوں کی تفصیلات بھی امریکہ کو فراہم کیں۔ جس پر چین سخت ناراض ہوا۔ 3۔ امریکی خصوصی ایلچی زلمے خلیل زاد نے کہا کہ افغانستان کے حوالے سے ہم نے حکومت پاکستان (عمران خان حکومت) سے جو جو چاہا وہ اس نے کیا۔ 4۔ عمران خان کی حکومت میں بھی سابقہ ادوار کی طرح بدستور امریکہ کو پاکستان کی زمینی اور فضائی حدود دستیاب رہیں اورعمران خان کی حکومت میں بھی امریکہ کے افغانستان میں آپریشنز جاری رہے۔  5۔ 4۔ ندیم افضل چن نے اعتراف کیا تھا کہ عمران خان نے امریکی ناراضگی کے خوف سے پاک ایران گیس پائپ لائن پر کام نہیں ہونے دیا۔  6۔ ندیم افضل چن نے کہا کہ ایک چینی آیا تھا جو ایک ارب ڈالر سے اوپر کی سرمایہ کاری کرنا چاہتا تھا۔ لیکن عمران خان نے کہا کہ نہیں نہیں ابھی چینیوں سے نہیں ملنا۔ امریکہ خفا ہوگا۔ چینی کمپنیوں کے این او سیز بھی روکے گئے۔ 7۔ عمران خان نے دعوی کیا تھا کہ جب اسکی حکومت آئیگی تو عافیہ صدیقی کو لائیگا۔ لیکن دورہ امریکہ میں اس ن

Websites that pay for articles

Here are some websites where you can post articles and potentially earn money, along with having a higher chance of acceptance if you follow their guidelines and cater to their audience:  1. Medium Partner Program Description:  Medium is a popular platform for writers. You can join the Medium Partner Program to earn money based on the engagement your articles receive. - **How to Apply:** Sign up on Medium, publish your articles, and apply for the Partner Program. - **Link:** [Medium](https://medium.com/)  2. HubPages Description:  HubPages is a user-generated content platform where you can publish articles on various topics. Revenue is earned through ads and affiliate marketing. - **How to Apply:** Create an account, follow their guidelines, and start publishing. - **Link:** [HubPages](https://hubpages.com/) 3.Vocal Media - **Description:** Vocal Media allows you to publish stories on a variety of niches and earn money through reads, tips, and bonuses. - **How to Apply:** Sign up, choo

آپریشن عزم استحکام

 آپریشن عزم استحکام  پی ٹی آئی سے جب کہا جائے کہ کے پی میں گیارہ سال سے تمہاری حکومت ہے دہشتگردی ختم کیوں نہیں ہورہی تو پی ٹی آئی کہتی ہے کہ دہشتگردوں سے لڑنا تو فوج کا کام ہے۔ پھر جب فوج دہشتگردوں سے لڑنے کا فیصلہ کرے تو پی ٹی آئی کہتی ہے کہ فوج کا کام تو سرحدوں پر کھڑا ہونا ہے۔ ہم دہشتگردوں کے خلاف کسی بھی آپریشن کی مخالفت کرینگے۔  یہ پی ٹی آئی کی کونسی پالیسی ہے بھائی؟ آخر چاہتے کیا ہو؟ عمران خان کی حکومت میں دو چیزوں کی تباہی ہوئی تھی۔ ایک معیشت کی اور دوسری امن کی۔ ضرب عضب کے بعد ملک میں کافی سکون ہوگیا تھا۔ پھر عمران خان نے ضرب عضب سے بھاگے ہوئے دہشتگردوں کو سرنڈر کروائے بغیر ملک میں واپس لانے کا فیصلہ کیا اور ہزاروں کی تعداد میں واپس لے آیا۔ ساتھ ہی سینکڑوں خطرناک دہشتگردوں کو جیلوں سے رہا کرنے کا حکم دیا۔ جس کے بعد انہوں نے کے پی میں وہی آگ لگا دی جو ضرب عضب سے پہلے تھی۔  موجودہ حکومت کسی نہ کسی طرح معاشی استحکام حاصل کرنے میں کامیاب ہوچکی ہے۔ سب سے بڑا کارنامہ یہ کیا کہ سعودی عرب، یو اے ای اور چین کو بہت بڑی سرمایہ کاری پر آمادہ کر لیا۔ لیکن کوئی ملک کسی ایسے ملک میں سرمایہ کا